Surah ghashiya With Urdu English And Arabic Translation

کوئی تجھے بھی چھپا لینے والی قیا مت کی خبر پہنچی ہے ۔

اس سن بہت سے چہرے ذلیل ہو نگے ۔

اور محنت کر نے والے تھکے ہو ئے ہو نگے ۔

وہ دہکی ہو ئی آگ میں جا ئیں گے ۔

اور نہا یت گر م چشمے کا پا نی ا  ن کو پلا یاجا ئے گا۔

انکے لئے سوائے کا نٹے دار درختوں کے اور کچھ کھا نا نہ ہو گا ۔

جو نہ  مو ٹا کرے گا نہ بھو ک مٹا ئے گا ۔

بہت سے چہرے اس دن تر و تا زہ اور آسودہ حا ل ہو نگے ۔

اپنی کو شش پر خو ش ہو نگے ۔

بلند و با لا جنتو ں میں ہو نگے ۔

جہا ں کو ئی بیہو دہ با ت نہیںسنیںگے ۔

جہا ں بہتا ہواچشمہ ہو گا ۔

اور اس یں اونچے اونچےتخت ہو نگے۔

اورآبخو ر ے رکھے ہوئےہونگے۔

اورایک قاریں لگےہو ئے تکیےہونگے ۔

اور مخملی مسندیں پھیلی پڑی ہو نگی ۔

کیا  یہ اونٹو ں کو نہیں دیکھے کہ وہ کس طرح پیدا کئے گئے ہیں ۔

اور آسما ن کو کہ کس طرح اونچا کیا گیا ہے ۔

اور پہا ڑوں کی طرح کہ کس طرح گا ڑ ھ دیئے گئے ہیں ۔

او زمیں کی طرف کہ کس طرح بچھا ئی گئی ہے ۔

پس آپ نصیحت کر دیا کر یں کیو نکہ آپ صر ف نصیحت کرنے والے ہیں ۔

آپ کچھ ان پر داروغہ نہیں ہیں ۔

ہا ں جو شخص رد گر دانی کر ے اور کفر کر ے ۔

اسے اللہ تعا لیٰ بہت بڑ ا عذاب دے گا ۔

بیشک ہما ری طرف ان کا لو ٹنا ہے ۔

پھر بیشک ہما رے ذمہ ہے ان سے حسا ب لینا ۔

اسلا م 360 سے اخذ

Surah ghashiya With English Translation

The news of the resurrection has reached you too.

Hearing this, many faces will be humiliated.

And those who work hard will be tired.

They will go into the fire.

And finally the water of the hot spring will be poured.

There will be nothing for them to eat except gnarled trees.

Which will neither make you fat nor quench your hunger.

Many faces will be refreshed and relaxed on this day.

You will be happy with your effort.

They will be in the highest heaven.

Where no one will listen to nonsense.

Where there will be a flowing spring.

And there will be no high thrones in it.

And the water will be kept.

And there will be pillows attached to a book.

And velvet cushions are not spread.

Have you not seen the camels how they were born?

And how the sky has been raised.

And how the mountains are built.

And how it is laid towards the ground.

So give advice because you are only one to give advice.

You are not lying to them.

Yes, whoever rejects and disbelieves.

Allah Ta’ala will punish him greatly.

Surely we have to return them. Then surely it is our responsibility to take account of them.