You are currently viewing سورہ القدر قرآن پاک کی بہت بابرکت سورت ہے
surah al qadr quran pak ki bohat babarkat surat hey

سورہ القدر قرآن پاک کی بہت بابرکت سورت ہے

  • Post author:
  • Post category:Islam

قدر عربی زبان کا لفظ ہے “شب قدر”۔ یہ رمضان المبارک کے اسلامی مہینے میں ایک خاص رات ہے جب مسلمانوں کا عقیدہ ہے کہ قرآن کی پہلی آیات حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم پر نازل ہوئیں۔ خود قرآن نے سورۃ القدر میں اس رات کا ذکر کیا ہے جو کہ قرآن کی 97ویں سورت ہے۔

سوتھ قدر کی صحیح تاریخ معلوم نہیں ہے، لیکن خیال کیا جاتا ہے کہ یہ رمضان کی آخری 10 راتوں میں واقع ہوتی ہے۔ مسلمان اکثر یہ راتیں نماز، تلاوت قرآن اور دیگر مذہبی سرگرمیوں میں گزارتے ہیں۔ ان کا عقیدہ ہے کہ سوتھ قدر پر دعا کرنا خاص طور پر فضیلت والا ہے اور اس رات میں کی جانے والی نیکیاں کئی گنا بڑھ جاتی ہیں۔بہت سی احادیث (رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے اقوال) ہیں جو سوتھ قدر کی اہمیت کے بارے میں بتاتی ہیں۔ ایک حدیث میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ شب قدر ہزار مہینوں سے بہتر ہے۔ ایک اور حدیث میں آپ نے فرمایا کہ جس نے شب قدر میں ایمان کے ساتھ اور ثواب کی امید کے ساتھ نماز پڑھی اس کے پچھلے گناہ بخش دیے جائیں گے۔شب قدر مسلمانوں کے لیے انتہائی روحانی اہمیت کی حامل رات ہے۔ یہ اپنی زندگی پر غور کرنے، معافی مانگنے اور مستقبل کے لیے فیصلے کرنے کا وقت ہے۔ یہ اللہ سے جڑنے اور اس کی نعمتوں کا تجربہ کرنے کا بھی وقت ہے۔سوتھ قدر پر مسلمان جو کچھ کرتے ہیں وہ یہ ہیں:رات بھر جاگ کر عبادت کریں۔قرآن کی تلاوت کریں۔دعائیں کریں۔صدقہ دیں۔قرآن کے مفہوم پر غور کریں۔خاندان اور دوستوں کے ساتھ وقت گزاریں۔شب قدر مسلمانوں کے لیے عظیم موقع کی رات ہے۔ یہ اللہ سے جڑنے اور اس کی نعمتیں حاصل کرنے کا وقت ہے۔ اگر آپ مسلمان ہیں تو میں آپ کو اس خاص رات سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھانے کی ترغیب دیتا ہوں۔