You are currently viewing الکریم” کا مطلب ہے “سب سے زیادہ سخی
al karim" ka matlab hai" sabse zaida sakhi

الکریم” کا مطلب ہے “سب سے زیادہ سخی

  • Post author:
  • Post category:Islam

اللہ” خدا کا عربی نام ہے، اور “الکریم” اس کے 99 ناموں یا صفات میں سے ایک ہے جو قرآن میں مذکور ہیں۔ “الکریم” کا مطلب ہے “سب سے زیادہ سخی” یا “سب سے زیادہ شریف”۔ یہ عربی لفظ “کریم” سے ماخوذ ہے جس کا مطلب ہے سخی، عزت دار، یا شریف۔

اللہ سبحانہ وتعالیٰ کو اس لیے الکریم کہا جاتا ہے کہ وہ تمام سخاوت اور شرافت کا سرچشمہ ہے۔ وہی ہے جو واپسی کی توقع کے بغیر اپنی مخلوق پر اپنی نعمتیں اور احسانات کرتا ہے۔ وہی گناہوں کو بخشنے والا اور اپنے بندوں پر رحم کرنے والا ہے۔ اللہ سبحانہ وتعالیٰ بھی وہی ہے جس نے ہمیں قرآن بطور ہدایت اور رحمت عطا کیا ہے۔
اللہ (SWT) قرآن مجید میں فرماتا ہے، “اور تمہارا رب بڑا بخشنے والا، نہایت رحم کرنے والا ہے” (سورۃ الکہف، 18:58) اور “اور وہ بخشنے والا، مہربان ہے” (سورۃ البروج، 85:14) )۔
نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ایک حدیث میں فرمایا، “اللہ کریم ہے اور وہ سخاوت، شرافت اور حسن اخلاق کو پسند کرتا ہے۔” (سنن ابن ماجہ، کتاب 37، حدیث 4338)۔ اس لیے بحیثیت مسلمان ہمیں اپنی زندگیوں اور دوسروں کے ساتھ میل جول میں اللہ کی سخاوت اور شرافت کی تقلید کرنے کی کوشش کرنی چاہیے۔