You are currently viewing سورہ الحجر قرآن مجید کی ایک طاقتور اور متاثر کن سورت ہے

سورہ الحجر قرآن مجید کی ایک طاقتور اور متاثر کن سورت ہے

  • Post author:
  • Post category:Quran Pak

ضرور سورۃ الحجر (عربی: سورة الحجر، “The Stoneland”) قرآن کی 15ویں سورت ہے۔ یہ 99 آیات پر مشتمل ہے۔ اس سورت کا نام الحجر شہر کے نام پر رکھا گیا ہے جو جزیرہ نما عرب میں واقع ہے۔

سورہ الحجر ایک مکی سورت ہے، یعنی یہ نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم پر مدینہ ہجرت سے پہلے مکہ میں نازل ہوئی تھی۔ سورہ کا آغاز پیغمبر اسلام کے ناقدین سے ہوتا ہے، جنہوں نے ان پر جھوٹا اور شاعر ہونے کا الزام لگایا تھا۔ قرآن نبی محمد کو یقین دلاتا ہے کہ وہ جھوٹے یا شاعر نہیں ہیں، اور یہ کہ وہ اللہ کے سچے نبی ہیں۔اس کے بعد سورت اللہ کی قدرت اور مخلوق کی نشانیوں کو بیان کرتی ہے۔ قرآن نے آسمانوں اور زمین کی تخلیق، انسان اور جنوں کی تخلیق اور اللہ کا انکار کرنے والوں کے لیے عذاب کا ذکر کیا ہے۔
سورۃ الحجر میں پیغمبر اسلام کے ناقدین کے لیے متعدد تنبیہات بھی ہیں۔ قرآن انہیں متنبہ کرتا ہے کہ اگر وہ اللہ اور اس کے رسول کو جھٹلاتے رہے تو انہیں سزا دی جائے گی۔
سورۃ الحجر کے چند اہم نکات یہ ہیں:حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم اللہ کے سچے نبی ہیں۔اللہ آسمانوں اور زمین، انسانوں اور جنوں کا خالق ہے۔اللہ کا انکار کرنے والوں کو سزا ملے گی۔اللہ خوب جانتا ہے کہ کون اس کے راستے سے بھٹک گیا اور کون ہدایت یافتہ۔سورہ الحجر قرآن مجید کی ایک طاقتور اور متاثر کن سورت ہے۔ یہ اللہ کی قدرت اور تخلیق کی یاد دہانی ہے، اور اس عذاب کا انتظار ہے جو اس کا انکار کرتے ہیں۔سورۃ الحجر کے بارے میں کچھ مزید تفصیلات یہ ہیں:سورہ کا آغاز اللہ کی قسموں کے سلسلے سے ہوتا ہے جو اس کی قدرت اور عظمت کی یاد دہانی ہیں۔اس سورت میں متعدد انبیاء کا ذکر ہے جو اللہ کی طرف سے بھیجے گئے تھے جن میں موسیٰ، عیسیٰ اور محمد شامل ہیں۔یہ سورہ اس عذاب سے خبردار کرتی ہے جو اللہ اور اس کے رسول کا انکار کرنے والوں کو انتظار کر رہی ہے۔اس سورت میں ان لوگوں کے لیے اجر کے بہت سے وعدے بھی ہیں جو اللہ پر ایمان رکھتے ہیں اور اس کے احکام کی پیروی کرتے ہیں۔سورۃ الحجر ان مسلمانوں کے لیے ایک قیمتی ذریعہ ہے جو رہنمائی اور الہام کے متلاشی ہیں۔ یہ اللہ کی قدرت اور تخلیق کی یاد دہانی ہے، اور انعامات کا انتظار ہے جو اس پر ایمان لاتے ہیں اور اس کے احکامات پر عمل کرتے ہیں۔