وعدہ توڑنے پر کیا احکامات ہیں؟؟؟جانیے

وعدہ توڑنے کی صورت میں کوئی کفارہ واجب نہیں ہوتا، کیونکہ کسی بات پر وعدہ کرنا بات کی پختگی وتاکید کے لیے ہوتا ہے اس سے قسم منعقد نہیں ہوتی ۔ البتہ وعدہ کرکے بلا عذر توڑدینا گناہ ہے ۔ اگر عذر ہو جیسا کہ آپ کی والدہ کو عذر ہے تو اس میں کوئی گناہ نہیں۔

اللہ تعال کا ارشاد ہے

وَأَوْفُوا بِعَهْدِ اللَّهِ إِذَا عَاهَدْتُمْ (النحل : 91)

اور تم وعدہ کو پورا کرو جب تم وعدہ کرو

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں