قرآن مجید فرقان حمید سے متعلق اہم معلومات

قرآان مجید کا نزول حضرت جبرئیل علیہ اسلام کے ذریعے سے ہوا
قرآن مجید کا نزول کا آغاز ماہ رمضان کی ایک مبارک رات کو ہوا جس کو لیلتہ القدر کہا جاتا ہے۔ قرآن مجید کو اس لیے تھوڑا تھوڑا نازل کیا جاتا رہا کہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم اور مسلمانوں کو مسلسل طور پر حوصلہ افزائی ہو اور ان کے لیے تسکین قلب کا باعث ہو۔
۲ دوسری حکمت یہ تھی کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی زندگی میں ظہور پذیر ہونے والے واقعات
قراں مجید میں چھ ہزارچھ سو چھیاسٹ آیات(۶۶۶۶ آیات)۔
قرآن مجید کو تین حصوں میں تقسیم کیا گیا
قرآن مجید کے ہر سپارے میں ایک سپارے میں پندرہ سے بیس رکوع ہیں۔
ایک رکوع میں کم وبیش دس آیات ہوتی ہیں
پورے قرآن مجید میں پانچ سو چالیس(۵۴۰ رکوع ہیں
قرآن مجید میں سات منزلیں ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں